بھارتی شہرپوناکی ایٹمی لیب میں دھماکے کیوں سارے معاملے کوچھپایاجارہاہے؟جانیں



پاک بھارت حالیہ کشیدگی کے دوران پاکستان نے جس طرح ذمہ داری کامظاہرہ کیاہے دوسری جانب اسی طرح اتنی ہی غیرذمہ داری کامظاہرہ کیاگیا۔بھارت میں اقلیتوں پرظلم وبربریت کے پہاڑ توڑے جائیں تودنیامذمت کرنابھی گورانہیں کرتی مقبوضہ کشمیرمیں نہتے کشمیری نوجوانوںکاقتل ہویاانسانی حقوق کی خلاف ورزیاں عالمی ضمیرسویارہتاہے۔

90کروڑ سے زائدبھارتی غربت کی لکیرکے نیچے زندگی گزارنے پرمجبورہوںتوبھی مغربی میڈیابھارت کودیومالائی کہانیوں کادیس قراردے کراس کی ترقی کے گن گاتاہےاوریہی حال انٹرنیشنل اٹامک انرجی کمیشن کاہے۔جس کاکام ایٹمی مواداوراس کے استعمال اورایٹمی قوت کے حامل ممالک میں ایٹمی فضلے اورموادمحفوظ بنانے کے لیے اٹھائے گئے اقدامات کویقینی بناناہوتاہے ایٹمی لیبارٹریز میں حادثات کی روک تھام کے علاوہ یورینیم کی نقل وحرکت پرنظررکھناتاکہ تابکاری موادغیرمحفوظ ہاتھوں تک نہ پہنچ جائے۔مگربھارت جسے انسانیت کے خون سے ہولی کھیلنے کی صرف اس بناء پراجازت ہےکہ عالمی استعماری قوتوں کے برصغیراورجنوبی ایشیامیں اس سے مفادات وابستہ ہیںتوپھرآئی اے ای اے کی کیامجال کہ وہ بھارت میں یورینیم کی کھلے عام فروخت یاایٹمی لیبارٹرز میں آئے روز ہونے والے حادثات پرگرفت کرتے ہوئے بھارت کی سرزنش کرےاوراسے ایٹمی فضلے اورایٹمی لیبارٹرز کومحفوظ بنانے کاحکم صادرکرے تاکہ بھارت کے عوام کوکسی بھی ایٹمی حادثے سے بچایاجاسکے۔بھارت نیپال کی سرحدوں سے انڈرورلڈ کے ذریعے دوسرے ممالک

کویورینیم کی غیرقانونی فروخت کرتاہےاوراس کی خبریں پڑوسی ملک کے اپنے توسط سے منظرعام پرآتی رہی ہیںدنیاکی آنکھ میں دھول جھونکنے کےلیے کچھ گرفتاریوں کے علاوہ تحقیقات کابھی اعلان کیاجاتاہے لیکن عملی طورپرصورتحال اس لیے جوں کی توں رہتی ہے کیونکہ آئی اے ای اےایٹمی موادکی حفاظت میں بھارت کی ناکامی پرکسی بھی قسم کی تادیبی کارروائی کرنے کوتیارنہیں۔6جولائی 2018کوکولکتہ سےایک کلویورینیم برآمدہونے کی خبرآئی ۔6افرادگرفتاربھی ہوئے برآمدگی میں کلکتہ کی پولیس یابھارتی سیکورٹی فورسز کاکوئی کمال نہیں لین دین کے مسئلے پرتنازع ہوااورانڈرورلڈکے اندرسے ہی مخبری کی وجہ سے یورینیم بیرون ملک سمگل کرنے کی کوشش میں کچھ افرادپکڑے گئےبھارتی میڈیامیں خبراشاعت کے بعدعالمی میڈیانے بھی خبرکی اشاعت کوضروری سمجھا۔ آئی اے ای اے کی جانب سے اس معاملے کے بعد بھارت کواس حوالے دیاگیاایک بھی نوٹس تاحال سامنے نہیں آیالیکن اس سے بھی کہیں زیادہ خطرناک واقعہ جون 2018کوپونامیں ڈیفنس ریسرچ اینڈ ڈویلپمنٹ آرگنائزیشن کی ایک ایٹمی لیبارٹری میں دھماکے کاہےجس میں ایک

انجینئرجاں بحق اورایک زخمی ہوگیاہائی انرجی میٹریل سرچ لیبارٹری ڈی آرڈی اوذیلی ادارہ ہے جوپونامیں قائم ہے ایٹمی لیبارٹری میں ریسرچ اورپرزہ جات کی تیاری کی ذمہ داری ہوتی ہے حادثے کے وقت لکشمی کانت سوناونت اوریوگیش کرتکراانتہائی دھماکاخیز موادپرکام کررہے تھے جوبھارتی حکام کے مطابق اس کام کاطویل تجربہ رکھتے تھےدھماکے کی وجہ سے لکشمی کانت کی فوری موت واقع ہوگئی اوراسی طرح کاایک اوردھماکااسی ریسرچ لیبارٹری 2015میں بھی ہواتھاپونامیں یہ لیبارٹری 800ایکڑ سے زائدرقبے پرپھیلی ہوئی ہے جس میںبھارت کے دوراورنزدیک ہرطرح کی رینج کے پرتھوی،ترشول ،ناگ ،اگنی اوربراہموس میزائل نہ صرف تیارکیے جاتے ہیں بلکہ ان میں استعمال ہونے والا باروداوراس کی استعدادمیں اضافے سے متعلق تجربات بھی اسی لیبارٹری میں کیے جاتے ہیں

Image result for blast in india pune laboratory in june 2018



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


تازہ ترین خبریں
اسلام آباد سٹاک ایکسچیج کی عمارت میں آگ لگ گئی
جعلی اکاؤنٹس کیس: انور مجید کے ایک اور بیٹے ذوالقرنین مجید گرفتار
المناک حادثے نے پاکستانیوں کی آنکھیں نم کردی
زرداری ، حمزہ شہباز کی گرفتار ی کے بعد فریا ل تالپور کی گرفتاری
مریم نواز کے سیکورٹی اسکواڈ کی گاڑی بڑے حادثے سے بچ گئی
پاکستانیوں کیلئے انتہائی افسوسناک خبر آگئی

تازہ ترین ویڈیو
ٹی وی اینکر ڈاکٹر عامر لیاقت حسین کی رمضان ٹرانسمیشن کے دوران غیر مناسب باتیں
جنرل راحیل کی دھمکی پر بھارتی پاگل ہوگئے،دیکھیں پاکستانی تجزیہ نگار نے بھی بھارتی کی چھترول کردی
پاکستان مخالف تقریر کرنے پر پاکستانی نوجوان نے لندن ائیرپورٹ پر محمود خان اچکزئی کو گالیاں اور اور ہاتھا پائی
اگر ایاز صادق کے دل میں کھوٹ نہیں تھا تو پھر وہ عمران خان کا سامنا کرنے سے کیوں بھاگے، ایاز صادق غیر جانبدارنہیں رہے۔ سنیے
مجھ سے ذاتی دشمنی نکالی جارہی ہے ۔۔۔، افسوس کہ وزیراعظم صاحب پوری بات سنے بغیر ہی اٹھ کر جارہے ہیں

Copyright © 2016 UrduBaaz.com. All Rights Reserved