بدھ , فروری 24 2021
صفحہ اول / دلچسپ و عجیب / ہم بات کرتے ہوئے ہاتھ کیوں ہلاتے ہیں؟ ماہرین کے دلچسپ انکشافات

ہم بات کرتے ہوئے ہاتھ کیوں ہلاتے ہیں؟ ماہرین کے دلچسپ انکشافات

آپ نے اکثر اوقات تقریری مقابلے دیکھے ہوں گے اور ان میں آپ نے یہ بھی دیکھا ہو گا کہ مقرر حضرات ناضرین کو نہ صرف اپنے الفاظ سے متاثر کرنے کی کوشش کرتے ہیں بلکہ اس کے ساتھ ان کی باڈی لینگوئج کی بھی بہت ایکٹو ہوتی ہے جس کو استعمال کرتے ہوے وہ حاضرین مجلس کے سامنے اپنی بات کو زیادہ مؤثر انداز میں پیش کرتے ہیں- اس کے علاوہ اگر آپ کبھی سیاسی جلسوں پر نظر ڈالیں تو وہاں پر بھی آپ کو کچھ ایسا ہی منظر نظر آے گا۔ جہاں پر سیاست دان اپنی تقاریر میں ہاتھوں کا بہت استعمال کرتے ہیں۔ اور ان میں سے بعض تو جوش خطابت اور جذبات میں آکر مائیک کو ہی اکھاڑ پھینکتے ہیں-

یہاں پر سوال یہ اٹھتا ہے کہ کیا جسمانی حرکات و سکنات کے بغیر ہم صرف لفظوں کو استعمال کرتے ہوئے ہم اپنی بات سامعین تک موثر انداز میں نہیں پہنچا سکتے؟ اسی سوال کو لیکر کی جانے والی تحقیقات کا کہنا ہے کہ زبان سے کی جانے والی باتوں اور جسمانی حرکات کا آپس میں چولی دامن کا ساتھ ہوتا ہے-

ایک سروے کے مطابق ایسے موٹیویشنل اسپیکر جو اپنی تقاریر کے دوران ہاتھوں کا استعمال چار سو سے پانچ سو دفعہ کرتے ہیں وہ دنیا میں بہت مقبول اور مشہور ہیں اور ایسا وہ اپنی بات کو مؤثر انداز میں حاضرین کو سمجھانے کے لیے کرتے ہیں اس کے مخلاف جو مقرر حضرات جسمانی حرکات کا استعمال کم کرتے ہیں ان کی مقبولیت کا گراف بہت کم ہے-

تحقیقات کے مطابق کسی کو مخاطب کرتے ہوئے ہاتھ اور جسم کا استعمال کچھ اہم وجوہات کی بنیاد پر کیا جاتا ہے جو کچـھ اس طرح ہیں

1: ہمارا جسم ہمارے سوچنے کے عمل میں اہم کردار ادا کرتا ہے

ماہر نفسیات کنزے گومین یہ کہتے ہیں کہ جسمانی حرکات بھی درحقیقت گفتگو کا ہی ایک اہم ذریعہ ہیں جن کو استعمال کرتے ہر مشکل سے مشکل بات کو لوگوں تک آسانی سے پہنچایا جا سکتا ہے- اسی ٹاپک کو لیکر ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ ہمارے دماغ میں ایک خاص حصہ ہمارے ہاتھوں کی حرکت کو ہمارے الفاظ کے مطابق کنٹرول کرتا ہے-

2: جسمانی حرکات احساسات و جذبات کے اظہار کا ایک ذریعہ ہیں

 

بعض دفعہ ہمارے منہ سے نکلتے لفظ اور ہماری باڈی لینگویج ایک دوسرے کا ساتھ نہیں دیتے اس حوالے سے کنزے گومین کا یہ کہنا ہے کہ ہماری جسمانی حرکات ہمارے جذبات کو ظاہر کرتی ہیں- بعض اوقات ہم انتہائ غصے کے عالم میں اپنے الفاظ پر تو قابو پا لیتے ہیں مگر اپنے جسم سے اس غصے کو ظاہر ہونے سے نہیں روک پاتے جس سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ جسمانی اظہار دراصل جزبات کے اظہار کا ایک ذریعہ ہیں-

3: جسمانی حرکات کی بھی اپنی زبان ہے۔

 

جسم کی حرکتوں کی بھی اپنی ایک زبان ہوتی ہے جو کہ اپنی حرکت سے اپنے مطلب کو واضح کر سکتی ہے اور اس کا استعمال بات چیت کرتے ہوے
کسی بات کو زیادہ موثر طریقے سے سمجھانے کے لیے کیا جاتا ہے-

4: بچوں کی تعلیم میں جسمانی حرکات کی اہمیت

 

جسمانی حرکات کا عمومی طور پر بچوں کی تعلیم میں بھی بہت اہم کردار ہے اور بچوں کی یادداشت اور ذہن میں لفظوں سے پہلے حرکات محفوظ ہو جاتی ہیں جو کہ ان کے کسی چیز کو سیکھنے کے عمل کو تیز کرتی ہیں-

About اردوباز

مزید پڑھیں

پولینڈ میں دنیا کا گہرا ترین سوئمنگ پول قائم

پولینڈ میں دنیا کا سب سے گہرا ترین سوئمنگ پول بنایا گیا ہے جس کی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.